جانوروں کے مرنے کے بعد کی زندگی

جانوروں کے مرنے کے بعد کی زندگی.

مجھے یاد ہے جب میں نے ایک کتے کو پاس گیا جو نیچے بیٹھا ہوا تھا. اس کا نا م میگھی تھا. وہ خوبصورت تھی ، سیاہ عظیم ڈین جو جرابوں کو کھا رہی تھی. لیکن وہ صرف 4 (بمشکل درمیانی عمر) کی تھی جب اُسےغیر مستقل مزاج شخصں سنڈروم کی ضرورت ہوتی تھی ہم اسے اس پر بیٹھا لے گئے.اور گھر نہیں آئے۔

میں یاد کرتا ہوں کہ کس طرح سے وضاحت کی گئی تھی کہ یہ ذیادہ تکلیف دہ نہیں ہوگی کہ وہ ابھی بڑھے گی اور "سو جائے گی ” جیسے بہت سے لوگوںنے کہا۔مجھے یاد ہے کہ میں نے اسے بہت نرمی سے یاد رکھا ، اس کے نام کی سرگوشی کرنا، اور سوچ رہاتھا، ” کہ اسکے بعدوہ چلی جائے گی” ، اس کے بعد وہ اب بھی کس طرح گر م تھی ، اس کا سرد بدلنے کے لئے کتنا وقت لگے گا.میگھی اس دن ہمارے گھر واپس نہیں آ ئی تھی ؛ میں نےکبھی بھی اس سے پہلے امید نہیں کی تھی کہ وہ ایک دوسرے بے حد شاندار گھر میں چلی گئی تھی ۔

کیا سارے کتے جنت میں جائے گے ؟

آپ کو شک نہیں ہے کہ اس سے پہلےچرچ میںکسی نے یہ کہا یا سناہو: تمام کتوں کے بارے کہ تمام جانور جنت میں جاتے ہیں۔یہ ایک آرام دہ اور پرسکون خیال ہے کہ جو ایک پالتو جانور کے مالک کی مدد کرسکتا ہے،اپنے چاہنےوالے ساتھی کے کھو جانے اور غمگین ہونے کی وجہ سے۔لیکن کیا یہ نظریات میں مبنی ہے؟ یہاں ہم کیا جانتے ہیں۔

صحیفوں سے

ہم صحیفوں سے جانور وں کی زندگی اور نوعیت کے بارے میں کچھ چیزیں سیکھتے ہیں. مثال کے طور پر، ہم جانتے ہیں کہ جانوروں کے پاس خدا کی طرف سے "زندہ روح” ہے، جس نے "ان کی زندگی کا سانس اٹھایا” (موسی 3: 1 9 کو دیکھیں)

ہم یہ بھی سیکھتے ہیں کہ "نہ ہی ایک بال، کوکوئی مٹاسکا ہے اور نہ گم کر پائےگا "”جن کوخدا نےپودوں اور جانوروں سے پیدا کیا ہے (تعلیم اور عہدمیں دیکھیں 29: 23-25). خدا نے یہ بھی وعدہ کیا ،وہ اُن سے آخری دنوں میں بڑی صفائی سے جھوٹ بولیں گے۔(ہوسیع دیکھیں 2:18

اگرچہ شاید سب سے بڑھ کر یہ یسوع کی نواحیوں کی تعلیمات میں پایا جاتا ہے: "کیادو پیسے میں پانچ چڑیاں نہیں بکتیی؟،تو بھی خدا کے حضور اُن میں سے ایک بھی فراموش نہیں ہوتی ” (لوقا 12: 5). اگر چڑیاں ا سے نہیں بھولیں گی تو، خدا کیوں کسی دوسرے جانور کو بھول جائے گا؟

نبیوں اور رسولوں سے

جانوروںکی ابدیت کے بارے میں جدید نبیوں نے بھی کہا ہے۔

خاص طور پر، صدر جوزف فیلڈنگ سمتھ نے اس مضمون پر بہت کچھ کہا تھا. انہوں نےاکتوبر 928 1کی کانفرنس میں خطاب کیا ، انہوں نے کہا، "جانور، سمندر کی مچھلیاں، ہوا کے فرشوں اور انسان کے ساتھ ساتھ، دوبارہ بنے ہیں ، دوبارہ پیدا ہونے کے ذریعے، یا تجدید کیا جانا چاہئے، کیونکہ وہ بھی زندہ روح ہیں۔

انہوں نے انجیل کے سوالات کے جوابات میں بھی لکھا ہے کہ "جانورروحانی ہوتےہیں اور ہمارے نجات دہندہ کی طرف سے بنائے گئے اور یہ بھی ہمیشہ کے کیے دوبارہ جی ٹھے گے اور ہمیشہ کی زندگی سے لظف اندوز ہو گے ۔

اگست1927 کے ایڈیشن کو بہتر بنانے کےلئے، ایلڈر آرسن ایف. وٹنی نے کہا، ” انہوں نے ایک مثبت سوال کیا ، کہ جانوروں کے پاس کیا روح ہے؟” یہ خدا کے مکاشفہ کی طرف سے کافی محتاج ہے۔ نبی جوزف کے خطاب میں انہوں نے مزید کہا”جوزف سمتھ نے اتنا یقین کیا، یا وہ نہیں کہے گا. . . ان کی پسندیدہ گھوڑےکے بارے میں، جب اس کی وفات ہوئی تھی، توقع یہ تھی کہ وہ اس آ خرت میں رہے۔

جوزف سمتھ نے یقین کیا ہے کہ جانوروں کی نجات میں اس نے ایک بیان کی طرف اشارہ کیا ہے جسے انہوں نے جانوروں کی زندگی کے بارے میں بنایا ہے: "ایک کہتاہےکہ، ‘میں جانوروں کی نجات پر یقین نہیں کر سکتا کوئی بھی شخص جو آپ کو بتاتا ہے اس سے نہیں ہو سکتا، وہ آپ کو بتائے گا کہ یہ باتیں سچ نہیں ہیں ۔ یوحنا نے جانوروں کی باتوں کو سنا ہے جن کوخدا کی عظمت میں بخشا، اور ان کو سمجھا "(چرچ کے دستاویزی تاریخ،والیم 5)

مشہوررسول اور معروف انجیل کے ماہر بروس آر میکونکی بھی یہ خیال رکھتے ہیں کہ جانوروں کی زندگی کی تمام اقسام ابدی ہیں ۔
پرندوں، فولوں، مچھلیوں، پودے، اور زندگی کی تمام قسموں نے ایک تفویض شدہ علاقے پر قبضہ کیا اور تخلیق، استحکام، اور نجات کی بڑی منصوبہ بندی میں ابدی کردار ادا کیا. اُنہیںسب سے پہلے وجود میں روح کی اداروں کے طور پر تخلیق کیا گیا تھا "(مورمن کی تعلیم، 1966)

دیگر ذرائع سے

اس سوال کے جواب میں سے ایک لیکن ایل ڈی ایس صحیفوں اور نبیوں کے علاوہ، میرے پسندیدہ ایل ڈی ایس بھائی گیررلڈ ای جونز سے اس ایک سوال کا جواب آتا ہے،، جو کیلیفورنیا کےبارکلے میں مذہبی انسٹی ٹیوٹ کا ڈائریکٹرتھا. مارچ 1977 میں شائع کردہ ایک سوال کے جواب میں، انہوں نے شرکت کی۔

جانوروں کی روحیں ہیں اور کیا وہ پھر دوبارہ ز ندہ ہوںگی ؟ جی ہاں. نبی جوزف سمتھ نے جانوروں کی دائمی حیثیت سے متعلق معلومات حاصل کی۔ اس کے متعلق سوالات کے جوابات،تعلیم اور عہد کے سیکشن 77 میں ہیں.انہوں نے ایک واعظ میں جانوروں کی بحالی کے بارے میں بھی بات کی لیکن اس موضوع پر توسیع نہیں کی. (چرچ کی تاریخ، 5: 343.)۔

کُتوں کی جنت

دیگر ایل ڈی ایس ذرائع ابلاغ موجود ہیں جو جانوروں کی زندگی کی اہمیت کا ذکر کرتے ہیں، خاص طور پر ان کی زندگی کے لئے ایک ساتھی کی حیثیت سے، انسانیت کی ذمہ داری کے حوالے سے۔ ہمیں بتایا جاتا ہے کہ "صادق ا پنےچوپائے کا خیال رکھتا ہے” (امثال 12:10)، جیسا کہ موسی کے قانون میں ظاہر ہوتا ہے، جس نے اسرائیلیوں کو ہدایت کی کہ اپنے جانوروں کو غیر قانونی طور پر سختی سے روکنے یا ان سے گریز کرنے سے بچیں۔ (استشنا 22:10، 25: 4).

لیکن کیا جانور دوبارہ زندہ ہوںگے اور جنت میں جائیںگے؟ ذاتی طور پر، اس معاملے پر میرےجذبات کا اس اقتباس کی طرف سے خلاصہ کیا جاسکتا ہے، ایک نامعلوم مصنف کو منسوب کیا جاتا ہے: "جنت وہ جگہ ہے جہاں تمام کتے ہیں آپ کی ہمیشہ کی محبت کےلئے نہ معلوم شاعرآپ کو مبارکباد دینے کے لئے ہیں

 پہلی بار یہ آرٹیکلwww.ldsliving.comشئع کیا گیا تھا۔

(Visited 34 times, 1 visits today)

Pin It on Pinterest

Share This